یونان کی جھیل پر مکڑیوں نے 1000 میٹر طویل جالے بُن دیئے ویب ڈیسک 2 گھنٹے پہلے

یونان: 

یونان کی مشہور جھیل وسٹونیڈا کے اطراف چند ہفتوں میں مکڑیوں نے لگبھگ 1000 میٹر طویل جالے بن دیئے ۔ چھوٹی عمارتیں، درخت اور پودے سبھی سفید جالوں نے ڈھانپ دیئے ہیں اور علاقے میں کسی سائے یا ڈراؤنی فلم کے منظر کا گمان ہوتا ہے۔

شمالی یونان میں واقع اس جھیل کے اطراف مکانات تک کو جالوں نے گھیر لیا ہے۔ ماہرین کے مطابق اس کی وجہ ایک خاص قسم کی مکڑی ہے جو بڑی مقدار میں جالے بنتی ہے اور غیرمعمولی گرمی کی وجہ سے اسٹریچ اسپائیڈر نے جالے بنائے ہیں۔

مکڑی کی یہ قسم ٹیٹرا گناتھا سے تعلق رکھتی ہے جو عموماً پانیوں کے قریب پائی جاتی ہیں اور اس کی بعض اقسام پانی پر تیرنے کی ماہر ہوتی ہیں۔

جھیل کنارے مچھروں کی تعداد بڑھنے سے مکڑیوں کو مناسب خوراک ملتی ہے اور اس کے بعد وہ جالے بن کر اپنی نسل بڑھاتی ہیں اور رفتہ رفتہ یہ پورا علاقہ جالوں سے بھرگیا ہے اور اب ایک کلومیٹرسے زائد رقبہ سفید جالوں سے بھرا ہوا ہے۔

مقامی ماہر نے بتایا کہ مکڑیوں کی خوراک کی فراوانی سے یہ علاقہ حشرات سے بھرچکا ہے، بڑھتی ہوئی گرمی اور نمی نے بھی ان کی آبادی بڑھانے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل یونان ہی میں ایک مقام پر سمندری جھیل کے پاس مکڑیوں نے سیکڑوں فٹ طویل جالے بن دیئے گئے۔

Share this on...Share on FacebookEmail this to someonePrint this page

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

گذشتہ شمارے